ہمیں فالو کریں
Banner
جنرل۔

خوراک کی حفاظت کو بڑھانے کے لیے متحدہ عرب امارات، برازیل اور کیوبا کے درمیان ہوا مشترکہ اقدام کا اعلان

منگل 13/2/2024

متحدہ عرب امارات نے وفاقی جمہوریہ برازیل اور جمہوریہ کیوبا کے ساتھ سہ فریقی تعاون کے اقدام کو اپنانے کا اعلان کیا، جس کا مقصد غذائی تحفظ کو بڑھانا اور 50 ملین ڈالر کی غذائی امداد فراہم کرنا ہے جوکہ برازیل سے بھیجی جائے گی۔ واضح رہے کہ یہ اقوام متحدہ کے فریم ورک کنونشن برائے موسمیاتی تبدیلی (COP28) کے فریقین کی اس کانفرنس کی سرگرمیوں کے ضمن میں ہے جو کہ ایکسپو سٹی دبئی میں 30 نومبر سے 12 دسمبر 2023 کے درمیان منعقد ہوئی تھی۔ چنانچہ یہ پہل خوراک کے لچکدار  نظام، پائیدار زراعت، اور آب و ہوا کی کارروائی کی حوصلہ افزائی کے لیے مشترکہ کوششوں کے اندر آتی ہے۔

چنانچہ اس اقدام کے ذریعے، متحدہ عرب امارات خوراک کے نظام کی لچک اور موافقت کو بڑھانے، پیداوار اور تقسیم کے خصوصی منصوبوں میں سرمایہ کاری بڑھانے، محفوظ، صحت مند اور پائیدار خوراک کے نظام کی حمایت کرنے نیز برازیل اور کیوبا کے تعاون سے غذائی تحفظ کو بڑھانے کے لیے مالی مدد فراہم کرے گا۔

وزیر مملکت برائے بین الاقوامی تعاون  محترمہ ریم بنت ابراہیم الہاشمی نے اس موقع پر کہا: "یہ اقدام فطرت کے تحفظ اور خوراک پیدا کرنے والوں کے لیے موسمیاتی تبدیلیوں کے اثرات کو کم کرنے میں معاون ہوگا۔ اسی طرح یہ اہم عالمی چیلنجوں کا مقابلہ کرنے اور غذائی تحفظ کے شعبے میں پائیدار حل کی حمایت کے مشترکہ عزم پر بھی زور دیتا ہے۔"

محترمہ نے مزید کہا: "اس اقدام سے عالمی چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لیے متحدہ عرب امارات کا پختہ عزم ظاہر ہوتا ہے۔ مزید برآں اس سے پائیداری اور قابل تجدید توانائی کی ترقی کے لیے ملک کی خواہش کی بھی تصدیق ہوتی ہے۔ چانچہ اس سے دو طرفہ اور کثیر جہتی سطحوں پر موسمیاتی تبدیلی پر اجتماعی کارروائی کو بڑھانے کے لیے اس کی خواہش کی ہوتی ہے۔"

اپنی جانب سے سفیر محترم، برازیلین کوآپریشن ایجنسی کے ڈائریکٹر، روئی پریرا نے کہا: "برازیل، متحدہ عرب امارات اور کیوبا اس اقدام کے ذریعے، تعاون کو اس طرح مضبوط کرنے کے لیے مشترکہ خواہش کی تصدیق کرتے ہیں جس سے کیوبا کے لوگوں کے لیے غذائی تحفظ میں مدد ملے گی۔ "

یہ بات قابل ذکر ہے کہ COP28 کانفرنس کے دوران 150 ممالک نے فوڈ سسٹمز، پائیدار زراعت اور موسمیاتی ایکشن پر متحدہ عرب امارات کے اعلامیہ کو منظوری دی تھی۔ چنانچہ یہ کانفرنس 85 بلین ڈالر سے زیادہ کی فنڈنگ اور 11 وعدوں اور اعلانات کو شروع کرنے میں بھی کامیاب رہی جنہیں تاریخی بین الاقوامی حمایت حاصل تھی۔

G20 کے میزبان ملک کے طور پر، برازیل اس بات پر زور دیتا ہے کہ متحدہ عرب امارات اور کیوبا کے ساتھ مشترکہ اقدام یکجہتی کے اصول پر مبنی ہے نیز یہ گروپ کی برازیل کی صدارت کے تین محوروں کے مطابق ہے جو کہ برازیل کے فیصلے کے مطابق غذائی تحفظ کو بڑھانے میں معاون ہے۔

ٹول ٹپ